Configure TagCopy to clipboard میرا پہلا سیکس‘شادی شدہ عورت کوچودا myri life a pehli chudai pakistani aunty ko choda real story ~ Desi Khani , Hindi kahani , Urdu Kahani , Sexy Stories,

Desi sex stories downlaod

Desi sex stories downlaod
SEx kahani

میرا پہلا سیکس‘شادی شدہ عورت کوچودا myri life a pehli chudai pakistani aunty ko choda real story


میرا پہلا سیکس‘شادی شدہ عورت کوچودا

 میں کمپیوٹر ہارڈویر اور سوفٹ ویئر کا کام کرتا ہوں۔ سیکسی سٹوری پڑھنا میرا پسندیدہ مشغلہ ہے۔عرصہ دراز سے ان سٹوریز کو پڑھ رہا ہوں۔ میں نے سوچا کیوں نہ میں بھی اپنا ذاتی تجربہ تمام لوگوں کے ساتھ شیئر کروں۔ یہ میرا پہلا سیکس تھا اور یہ بالکل سچی کہانی ہے۔  امید ہے کہ تمام دوستوں کو پسند آئے گی۔

میں اپنے ایک دوست سے ملنے اس کے گھر جا رہا تھا کہ اس کے گھر سے پہلے گلی میں ایک لڑکی اپنے دروازے میں کھڑی تھی میں نے اس کو دیکھا تو وہ مجھے اچھی لگی میں نے اس کو دیکھنے کیلئے دوبارہ سے چکر لگایا اس نے ہنس کر دیکھا میں نے اس کا نام پوچھااس نے روبی بتایا۔ دو تین دن ایسے ہی گلی میں ہلکی پھلکی بات چیت ہوتی رہی۔ ایک دن میں نے ملنے کو کہا تو مگر وہ ہنستے ہوئے کہنے لگی رات کوآٹھ بجے آنا ۔ رات کو آٹھ بجے میں گیا تو دیکھا کہ واقعی وہ دروازے میں کھڑی ہے ۔ اس کے فگر36,32,34 بہت خوبصورت تھے میں اس کو کھڑا کافی دیردیکھتا رہا۔ 

دو دن بعد اس نے مجھے کہا کہ تم کل نو بجے آنا میرے گھر پر کوئی نہیں ہو گا۔ میں دوسرے دن تیار ہو کر اس کو ملنے چلا گیا نو بجے سے پہلے ہی میں اس کی گلی میں تھا۔ دروازہ کھلا تھا مگر میری ہمت نہیں تھی کہ اندر جا سکوں تھوڑی دیر بعد وہ دروازے پر آئی اور ادھر ادھر دیکھ کر مجھے کہا کہ اندر آجاﺅ میں اندر چلا گیا تو وہ مجھے ایک بیڈ روم میں لے گئی اور سائیڈ پر لگے صوفے پر بیٹھا دیا۔ جہاں پر ایک بچی سوئی ہوئی تھی میںنے پوچھا یہ کون ہے تو اس نے مجھے بتایا کہ اس کی بیٹی ہے۔ میں حیران رہ گیا کہ میں جسے کنواری لڑکی سمجھ رہا تھا وہ شادی شدہ ہے۔

 ابھی میں اسی پریشانی میں تھا کہ اس نے میرے پاس بیٹھتے ہوئے مجھے فرنچ کس کردی۔ میرے رونگٹے کھڑے ہو گئے۔ پھر وہ باتیں کرنے لگی کہ اس کا شوہر اور ساس ایک شادی میں شرکت کیلئے لاہور سے باہر گئے ہیں اور دو دن بعد آئیں گے لیکن میں ذہنی طور پر پریشان تھا کچھ وقت کے بعد اس نے دوبارہ مجھے کس کرنا شروع کردی میرے رسپانس نہ دینے پر اس نے پوچھا کیا بات ہے کوئی پریشانی ہے تم میرا ساتھ کیوں نہیں دے رہے ہو۔ میںنے کہا کہ میں تم کو کنواری سمجھ رہا تھا اور تم تو شادی شدہ ہو۔ اس نے کہا کہ کنواری اور شادی شدہ میں فرق ہی کتنا ہوتا ہے لیکن میں تم کو کنواری سے زیادہ پیار کروں گی اور تم بھول جاﺅ گے کہ تم نے کسی شادی شدہ عورت کو پیار کیا ہے ویسے بھی میری عمر ابھی صرف 25سال ہے ۔ دیکھنے میں واقعی میں کنواری لگتی ہوں مزہ بھی کنواری والا دونگی۔ اب پھر اس نے کسنگ شروع کردی میں نے بھی رسپانس کرنا شروع کردیا۔ اب میں اور وہ فرنچ کس کررہے تھے اور میرے ہاتھ اس کے جسم کو ناپ رہے تھے کبھی اس کے ممے اور کبھی اس کی کمر ‘ پیٹ پر میں اپنے ہاتھ پھیر رہا تھا میںنے اپنا ہاتھ اس کے گریبان سے اندر ڈالا اور اس کا مما پکڑ کر دبایا تو اس کے منہ سے آہ آہ کرکے سسکی نکلی اور وہ ایک دم سے پیچھے ہٹ گئی میں نے پوچھا کیا ہوا تو وہ بغیر کچھ بولے وہاں سے اٹھی اور کمرے میں پڑے ہوئے ساﺅنڈ سسٹم کو آن کرکے دوبارہ میرے پاس آکر بیٹھ گئی۔ میں نے پوچھا اس کو آن کیوں کیا تو اس نے کہا کہ ہماری آوازیں باہر نہ چلی جائیں اس لئے۔ اب دوبارہ کسنگ شروع ہو گئی میںنے دوبارہ سے اس کے ممے دبانے شروع کردیئے جیسے یہ میں اس کے ممے دباتا اس کے منہ سے آہ آہ آہ آہ آہ او او او او کی آوازیں نکلنا شروع ہو جاتیں۔ میںنے آہستہ سے اس کی قیمض کو اوپر اٹھایا اور دونوں ہاتھوں سے اس کے ممے پکڑ لئے اور ان کو مسلنا شروع کر دیا اب اس نے آنکھیں بند کرلیں اور سسکاریاں بھرنے لگی۔ میں نے اس کی قیمض کو اتارنے کی کوشش کی تو اس نے خود ہی اپنی قمیض اتار دی اب میرے سامنے وہ کالے رنگے کے بریزر میں آنکھیں بند کئے صوفے سے ٹیک لگائے بیٹھی تھی میرے سے رہا نہ گیا اور میں نے بریزر کے اوپر سے ہی ممے کو منہ میں لے کر چوسناشروع کردیا تو اس کے منہ سے بے ساختہ آہ او او آہ میں مر گئی کی آوازیں نکلنا شروع ہو گئیں۔ میںنے بریزر کی ہک کھول دی اور اس کو اتار پھینکا اب اس کے سفید ممے جن پر گلابی رنگ کی ٹیکی بنی ہوئی تھی میرے سامنے تھی میںنے ایک ممے کو ہاتھ میں پکڑ کر مسلا اور دوسرے کو منہ میں لے کر چوسناشروع کردیا اب اس کی حالت یہ تھی کہ وہ اپنے اپنی آواز کو روکنے کیلئے اپنے ہونٹ کاٹ رہی تھی اور میرے سر کو پکڑ کر اپنے ممے پر دبا رہی تھی تقریباً دس سے پندرہ منٹ تک میں باری باری اس کے ممے چوستا رہا اسی دوران اس نے مجھے زور سے لگے لگایا اس کا جسم ہلکا ہلکا کانپ رہا تھا اچانک ایک جھٹکا کھا کر وہ ڈھیلی ہو گئی میں نے پوچھا کیا ہوا تو اس نے جواب میں ایک لمبی فرنچ کس کی اور کہا تم بہت نشیلے ہو میں فارغ ہو گئی ہوں۔ میرا لوڑا (ساڑھے سات انچ )فل ٹائٹ ہوا ہوا تھا اس نے کہا تم بیٹھو میں ابھی آتی ہوں اور کمرے کے سات اٹیچ باتھ روم میں چلی گئی واپس آکر بتایا کہ میں پھدی صاف کرنے گئی تھی۔ اب دوبارہ سے اس نے کسنگ شروع کردی میں نے کہا کہ میں نے تم کو پیار کیا ہے اب تم کرو اس نے کہ ہاںمیں ضرور تم سے پیار کرتی ہوں اس نے کھڑے ہو کر مجھے بھی کھڑا کیا اور میرے لن پر ہاتھ رکھ کرکسنگ کرنے لگی اور مجھے کہا کہ بیڈ پر چلو میں نے کہا وہاں پر تمہاری بیٹی سوئی ہوئی ہے اس نے بچی کو اٹھا کر صوفے پر لٹا دیا اور اب ہم دونوں بیڈ پر آگئے اس نے میری شرٹ کے بٹن کھول دیئے اور اس کو اتار کر پرے پھینک دیا اور اب وہ میری پینٹ کو کھولنے لگی میں نے جلدی سے اپنی پینٹ خود ہی اتار دی اب میں انڈرویر میں اوروہ شلوار پہنے ہوئے تھی۔ اس نے آہستہ آہستہ فرنچ کس کرنے کے بعد میرے پیٹ پر کس کی اور میری ٹانگوں پر آکر ہلکی ہلکی کاٹنا شروع کردیا اور میرا انڈرویئر پکڑ کر نیچے کھینچا تو میرا فل ٹائٹ لن ایک دم سے نکل کر سامنے آ گیا وہ ایک دم سے اس کو دیکھ کر حیران رہ گئی میں نے پوچھا کیا ہوا تو بولی میرے خاوند کا لن تو اس سے چھوٹا اور کم موٹا ہے۔ اس نے لن کو ہاتھ میں پکڑ کر سہلانا شروع کردیا اور اپنا ہاتھ اوپر نیچے کرنے لگی پھر اس نے میرے ٹوپے پر اپنے ہونٹ رکھ دیئے آہستہ آہستہ ٹوپا اس کے منہ میں تھا اس نے اس پر زبان پھیرنی شروع کی تو مجھے بھی مزہ آنے لگا۔ کچھ دیر بعد ہی میرا آدھے سے زیادہ لن اس کے منہ میں تھا اور وہ اس کو لولی پپ کی طرح چوس رہی تھی اور میرے منہ سے بے اختیار آہ آہ کی آوازیں نکل رہی تھیں۔ اس نے لن اور ٹٹوں پر زبان پھیرنا شروع کی تواور زیادہ مزہ آیا۔ اسی مزہ میں میں فارغ ہونے کے قریب پہنچ گیا میں نے اس کو بتایاکہ میں فارغ ہونے لگا ہوں تو اس نے کہا کہ ٹھہرو اور لن پرزیادہ تھوک لگا کر ہاتھ سے مٹھ مارنے لگی وہ لیٹ گئی اور مجھے کہا کہ میں اٹھ کر اس کے جسم پر اپنی منی پھینک دوں۔ اب وہ تیزی سے مٹھ مار رہی تھی کہ میں فارغ ہو گیا ساری منی اس کے مموں اور پیٹ پر گر گئی ۔ وہ اٹھی اور اٹھ کر کپڑے سے میرے لن کو اچھی طرح صاف کیا اور اپنا جسم دھو کر واپس آگئی۔ اب اس نے مجھے جوس پلایا اور پھر دوبارہ سے لیٹ کر کسنگ کرنے لگے میرا لوڑا پھر کھڑا ہونا شروع ہو گیا اور اس نے دوبارہ اس کو منہ میں لے لیا اس نے اب ہم 69پوزیشن لے لیتے ہیں میںنے اس کی پھدی چاٹنے سے انکار کردیا۔ اس نے کہا کہ چلو تم میرے ممے چوسو ایک دو منٹ کے بعد جب مجھے اس کے لن چوسنے سے مزہ آنے لگا تو اس نے کہا کہ میری چوت کو بھی چاٹو نہیں تو اب بس۔ میں مزہ میں تھا نہ چاہتے ہوئے بھی اس کی چوت کو چاٹنا پڑا۔ میں نے اس کی ٹانگوں کو کھولا اور اس کی چوت پر کس کی اور آہستہ سے زبان پھیری کہ وہ اس کی سسکاریاں نکلنے لگیں اور وہ تیزی سے میرا لن چوسنے لگی۔ اس کی آوازوں سے مجھے بھی اچھا لگا اور میں نے اچھی طرح سے اس کی چوت کو چاٹنا شروع کردیا کچھ منٹ کے بعد وہ پچھے ہو کر بولی کہ اب میری پھدی کو پھدا بنا دو کیونکہ میرے شوہر کا لن تو اس قابل نہیں ہے لیکن تمہارے سائز سے مجھے لگتا ہے کہ آج میری پھدی پھدی نہیں پھدا بن جائے گی ۔ میں نے اس کو پکڑ کر سیدھا کیا اور اس کو لٹا کرٹانگیں کھولیں اس نے اپنی کمر کے نیچے ایک تکیہ سیٹ کرلیا۔ اب اس کی چوت میرے سامنے تھی ۔ میں نے اپنا لوڑا اس کی چوت پر پھیرنا شروع کردیا۔ جیسے ہی میرا لوڑا اس کے سوراخ پر جاتا تو وہ سسکاری بھرتی اور اوپر کو دھکا لگاتی اور جیسے ہی اس کے دانے کو ٹچ کرتا تو آہ او آہ آہ کی آوازیں نکالتی اس کی آوازیں مجھے اورزیادہ مزہ دے رہی تھی۔ اس نے کہا میرے یار اب نہ تڑپاو اور اپنا خوبصورت اور موٹا لوڑا میری پھدی میں ڈال دو لیکن آہستہ آہستہ اندر کرنا یہ کافی بڑا ہے خیر میں نے پھدی کے سوارخ پر لوڑے کو فٹ کیا اور آہستہ سے جھٹکا دیا لیکن میرا لوڑا اندر نہ جا سکا۔اس نے پوچھا کیا پہلے کبھی پھدی نہیں ماری جو اناڑیوں کی طرح کررہے ہو تو میں نے بتایا کہ یہ میرا پہلا موقع ہے تو اس نے کہا کہ میری پھدی تمہارے لوڑے کے حساب سے ٹائٹ ہے تم ذرا زور لگاﺅ گے تو یہ اندر جائے گا اور کہا کہ میں تم کو بہت کچھ سکھا دوںگی۔
اس نے کہا کہ ذرا زور لگاﺅ میں نیچے سے زورلگاتی ہوں۔ اب دوبارہ سے میں نے زور سے جھٹکا لگایا تو اس نے بھی نیچے سے جھٹکا لگایا لیکن یہ اس کو مہنگا پڑا اور میرا آدھے سے زیادہ لوڑا اس کی پھدی میں تھا اور اس کے منہ سے ایک چیخ نکل گئی اگر کمرے میں میوزک آن نہ ہوتا تو اس کی آواز سے ہمسائے ضرور آجاتے۔ اس نے کہا بس کرو اتنا ہی ڈالو زیادہ برداشت نہیں ہو گا اس کی پھدی مجھے واقعی ہی ٹائٹ تھی۔ اب اس نے کہا کہ اب ہلنا شروع کرو اور میں نے آہستہ آہستہ اندر باہر کرنا شروع کردیا۔ اب وہ بھی نیچے سے ہل کر مجھے رسپانس کررہی تھی ۔ دو تین منٹ کے بعد اس نے کہا اب تھوڑا اور ڈالو میرا مزے سے برا حال تھا میں نے سوچا کہ کیوں نہ ایک ہی دفعہ اندر کردو اور میںنے یہ کر دکھایا میں نے اپنا لن ٹوپے کے علاوہ باہر نکال لیا اور اس کو فرنچ کس کرنے لگا اب میں نے ایک زور دار جھٹکے سے سارا لوڑا اس کی پھدی میں ڈال دیا اب اس کی چیخ میرے منہ میں رہ گئی کیونکہ میں اس کو فرنچ کس کررہا تھا وہ نیچے سے تڑپ کررہ گئی ۔ اب میرا لوڑا فٹ ہو چکا تھا ایک دو منٹ کے بعد اس نے پھر کہا اب ہلنا شروع کردو میں برداشت کرلوں گی۔ میں نے ہلنا شروع کردیا۔ اس کے منہ سے مزے اور تکلیف سے آہ اوئی او آہ آہ آہ آہ آہ ................ کی آوازیں نکل رہی تھیں اور میں بھی کافی مزے میں تھا کہ اس نے کہا کہ زور سے کرو میںنے اپنے جھٹکوں میں تیزی لے آیا اور اب کمرے میں میوزیک کے ساتھ دو جسم ٹکرانے کی آوازیں بھی آرہی تھیں پانچ یا سات منٹ بعد اس نے نیچے سے زیادہ زور لگا کر رسپانس شروع کردیا اور اس کی آوازوں میں بھی تیزی آگئی آہ آہ آہ آہ آہ آہ آہ آہ آہ آہ او او او او اوئی آہ آہ آہ ................ مزہ آگیا تم نے مجھے سکون دلا دیا۔ مزہ آ گیا آہ آہ آہ ............ جیسے ہی میں جھٹکالگاتا وہ اچھل کر میرا ساتھ دیتی۔ اس نے اپنی ٹانگوں سے میری کمر کے گرد جال بنا لیا اور مجھے جھکڑ کر رکھ دیا مجھے ایسا محسوس ہوا کہ اس کی پھدی میرے لوڑے کو بھینچ رہی ہے اور
اس کا جسم ایک دم سے اکڑ کر ڈھیلا ہو گیا اوروہ بھی ایک لمبی اوئی کے بعد آرام سے لیٹ گئی میں نے پوچھا کیا ہوا بولی میں فارغ ہو گئی ہوں مجھے بھی محسوس ہوا کہ میرا لوڑا کافی چکنا ہو گیا ہے اس کے فارغ ہونے سے پھدی منی سے بھر چکی تھی اور عجیب و غریب آوازیں نکل رہی تھی۔ اس نے کہا اپنا لوڑا باہر نکالو میں نے کہا میں تو ابھی تک فارغ نہیں ہوا اس نے کہا ایسے تم کو زیادہ مزہ نہیں آئے گامجھے پھدی صاف کرلینے دو پھر کرنا۔ میں نے لوڑا باہر نکا لیا۔ اس نے کپڑے سے اچھی طرح اپنی پھدی کو صاف کیا اور میرے لوڑے کو بھی صاف کرنے کے بعد بولی اب مجھے اچھی طرح سے چودو میں نے اس کو گھوڑی بننے کو کہا وہ گھوڑی بن گئی میں نے پھدی کے اوپر لوڑا رکھا اورزور دار جھٹکے سے اندر ڈال دیا۔ میرا لوڑا پھنستا ہوا اندر چلا گیا۔

میں نے دوبارہ اس کی چدائی شروع کردی۔ لن پھنس کر اندر جا رہا تھا جس کی وجہ سے اس کو درد ہو رہی تھی اور وہ مزے اور تکلیف سے آہ آہ اوئی آہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کی آوازیں نکال رہی تھی۔ اس نے بھی ہلنا شروع کردیا اورمیرا ساڑھے سات انچ کا لوڑا فل اندر تھا اور اس کی چوت میرے لوڑے کو بھینچ رہی تھی۔ وہ بھی مزے سے سسکیاں رہی تھی پندرہ منٹ تک چودنے کے بعد اس نے کہا میں تھک گئی ہوں تم نے کوئی دوائی وغیرہ تو نہیں کھائی ہے جو اتنا ٹائم لگا رہے ہو میں نے کہا نہیں اس نے سٹائل بدلنے کو کہا اب اس نے مجھے صوفے پر بٹھایا اور خود میری گود میں لن کواپنی پھدی پر سیٹ کیا اور اوپر بیٹھ گئی اور آہستہ آہستہ ہلنے لگی اس کی سپیڈ تیز ہوتی جا رہی تھی اور مزے سے میرے منہ سے بھی آوازیں نکل رہی تھیں چند منٹ کے بعد میں نے اس کو کہا کہ میں فارغ ہونے والا ہوں تو اس نے ہلنا بند کردیا اور مجھے کس کرنے لگی اور کہا کہ اب پھر مجھے بیڈ پر لٹا کر چودو اور جتنی طاقت سے ہو سکتا ہے جھٹکے مارنا میں نے کہا ٹھیک ہے دوبارہ سے اس کو لٹا کرتکیہ اس کی کمر کے نیچے سیٹ کیا اور دوبارہ لوڑے کو اس کی پھدی کے اوپر رکھ جھٹکے سے اندر کردیا اس نے آہ کی اور سسکاری بھری اور نیچے سے اوپر کو اٹھی پورا لن جڑ تک اس کی پھدی میں گھس گیا۔ اب دوبارہ سے اس کی زبردست چدائی شروع کردی میں آدھے سے زیادہ لن باہرنکال لیتا اور اس کو جھٹکے سے دوبارہ اندر ڈال دیتا اس نے آہ آہ آہ اوئی او کے ساتھ زور سے کرو زور سے کرو پورا لن ڈال دو میری پھدی کی کسر پوری کردو زور سے پورا لن ڈال دو
(ٹوٹل 30-35منٹ)کی زبردست چدائی کے بعد میں فارغ ہونے والا ہو گیا تھا میں نے اس کو بتایا تو اس نے کہا کہ پھدی کے اندر ہی فارغ ہونا اس کی پیاس بجھ جائے گی۔ میں نے زور سے جھٹکے لگانے شروع کردیے وہ فل رسپانس کررہی تھی۔
اس نے کہا کہ جلدی کرو میں بھی فارغ ہونے والی ہوں۔ چار پانچ فل سپیڈ جھٹکوں کے بعد اس نے مجھے زور سے پکڑ لیا اور میں نے اس کو میرے لن نے ساری منی اس کی پھدی میں اگل دی وہ بھی میرے ساتھ ہی فارغ ہو گئی۔ اس کی پھدی میری اور اس کی منی سے بھر گئی میںاس کے اوپر ہی لیٹ گیا اس نے زور سے مجھے کس کی میری زبان چوسنا شروع کردی۔ اس نے کہا کہ اس نے زندگی میں اس سے زیادہ مزے کا سیکس نہیں کیا۔ اب وہ میرے ساتھ اکثر سیکس کرے گی اور میرے لئے زیادہ مزے کا انتظام بھی کرے گی ۔ اس رات میں چار دفعہ فارغ ہوا اور وہ بھی سات آٹھ دفعہ ہوئی ۔

اس نے تو میری اتنی تعریفیں کیں کہ اس کے محلے کی دو اورعورتیں اوراس کی کنواری اور شادی شدہ بھانجی
      اور ان کی دوستوں کو کئی دفعہ چودا۔ جس کی تفصیل پھر کبھی سہی۔
Advertisement

1 comments:

Post a Comment

 

full my wife nangi photo album click on pic

Hot Pakistani girls